87

جج ارشد ملک کا مبینہ ویڈیو سکینڈل سپریم کورٹ میں سماعت کیلئے مقرر

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) احتساب عدالت کے سابق جج ارشد ملک کا مبینہ ویڈیو سکینڈل سپریم کورٹ میں سماعت کیلئے مقرر ،چیف جسٹس کی سربراہی میں 3رکنی بنچ سماعت کرے گا ۔ جیونیوز کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان کے چیف جسٹس صف سعید کھوسہ کی سربراہی میں

3 رکنی بنچ 16 جولائی کو جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو کے معاملے کی سماعت کرے گا۔ گزشتہ روز عدالت عظمیٰ میں اس حوالے سے ایک آئینی درخواست دائر کی گئی تھی، درخواست ایڈووکیٹ چودھری منیر صادق کے توسط سے سپریم کورٹ رجسٹری میں جمع کروائی گئی تھی۔درخواست میں وفاقی حکومت، ن لیگ کے صدر شہباز شریف، نائب صدر مریم نواز، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، راجا ظفر الحق اور ناصر بٹ کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست گزار نے عدالت عالیہ سے استدعا کی کہ وہ اس ویڈیو کی تحقیقات کرنے کا حکم دے۔ دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ عدلیہ کے وقار کو برقرار رکھنے کیلئے ملوث افراد کیخلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے، انکوائری سے عدلیہ کے وقار، عزت اور آزادی پر اٹھائے گئے سوالات کا جواب مل جائے گا۔درخواست کے مطابق ایسا لگتا ہے ویڈیو لیک ہونے سے عدلیہ کی آزادی پر سوال اٹھایا گیا ہے،اس لئے عدالت کواس معاملے کی وضاحت کرنی چاہئے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں