38

بشکیک: عمران خان کا استقبال تو کرغستان کے وزیر اعظم نے کیا مگر۔۔۔ نریندر مودی کو لینے کے لیے کون ائیر پورٹ پہنچا؟ پوری دنیا حیران

کرغستان (نیوز ڈیسک) کرغستان پہنچے پر وزیراعظم عمران خان کا استقبال کرغزستان کے وزیراعظم محمد کلئی ابولگزیف جب کہ بھارت کے وزیراعظم نریندر مودی کا استقبال کرغستان کے نائب وزیراعظم نے کیا۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہ اجلاس میں شرکت کیلئے جمعرات کو کرغزستان کے دارالحکومت بشکک پہنچے۔

کرغزستان کے وزیراعظم محمد کلئی ابولگزیف اور وزیر صحت کسموسبیک سراؤچ نے وزیراعظم کا خیرمقدم کیا۔ وزیراعظم عمران خان شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہ اجلاس میں شرکت کیلئے جمعرات کو کرغزستان کے دارالحکومت بشکک پہنچ گئے۔ کرغزستان کے وزیراعظم محمد کلئی ابولگزیف اور وزیر صحت کسموسبیک سرائوچ نے وزیراعظم کا خیرمقدم کیا۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور معاون خصوصی امور نوجوانان عثمان ڈار بھی وزیراعظم کے ہمراہ ہیں۔جب کہ بھارت کے وزیراعظم نریندر مودی بھی جمعرات کو کرغستان پہنچے،جہاں ان کا استقبال کرغستان کے نائب وزیراعظم ضمیر بیک مریپباویچ اسخاروف نے کیا۔جس پر ایک صارف نے ٹویٹ بھی کیا کہ نریندری مودی نے پاکستانی فضائی حدود استعمال کرنے کی بجائے لمبا روٹ اپنایا۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا کہ اگر نریندر مودی پاکستان کی فضائی حدود استعمال کرتے تو ان کو کر غستان پہنچے میں تین گھنٹے لگے۔تاہم مودی نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے لمبا روٹ استعمال کیا جس سے ان کو چھ گھنٹے کا طویل سفر کرنا پڑا۔ خیال رہےپاکستان کے علاوہ ایس سی او کے مستقل ارکان میں چین، روس، بھارت، قزاخستان، کرغزستان، تاجکستان اور ازبکستان شامل ہیں جبکہ افغانستان، منگولیا، ایران اور بیلا روس کو مبصر کی حیثیت حاصل ہے۔ وزیراعظم عمران خان کو اجلاس میں شرکت کی دعوت کرغزستان کے صدر سورون بیکوف نے دی تھی۔ اجلاس میں اہم بین الاقوامی تنظیموں کے نمائندے بھی شرکت کر رہے ہیں۔ مختلف شعبوں میں باہمی تعاون میں اضافہ کی غرض سے معاہدوں پر دستخط کے علاوہ سربراہان مملکت اجلاس میں اہم نوعیت کے فیصلے بھی کریں گے۔ وزیراعظم اس موقع پر دیگر ملکوں کے سربراہوں سے ملاقاتیں بھی کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں