60

ملک کے مالی قرضوں میں دباؤ کم : آئی ایم ایف نے پاکستان کے ساتھ کتنے ارب ڈالرز کے پروگرام کی تصدیق کر دی؟ تفصیلات آگئیں

لاہور (ویب ڈیسک) آئی ایم ایف کے ترجمان جیری رائس نے کہا ہے کہ پاکستان کے ساتھ 6 ارب ڈالر پروگرام پر بات چیت مکمل ہوئی۔ آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کو معاشی طور پر مستحکم کرے گا، پاکستان کیلئے قرضوں کا دباؤ کم ہوگا اور اقتصادی ترقی بڑھے گی۔

ترجمان آئی ایم ایف جیری رائس نے صحافیوں کو آن لائن بریفنگ کے دوران کہا ہے کہ پاکستان کے ساتھ سٹاف لیول مذاکرات 12 مئی کو مکمل ہوئے جس کے تحت پاکستانی حکام کے ساتھ 6 ارب ڈالر پروگرام پر بات چیت مکمل ہوئی ہے۔جیری رائس کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں سماجی شعبوں کیلئے اخراجات بڑھیں گے، بنیادی ڈھانچے اور انسانی وسائل کی بہتری ممکن ہو گی ان اقدامات کے ذریعے پاکستان میں معاشی اصلاحات چاہتے ہیں۔ دوسری جانب عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) نے تصدیق کی ہے کہ پاکستان کے ساتھ 6 ارب ڈالر پروگرام پر بات چیت مکمل ہوئی ہے۔ آئی ایم ایف کے ترجمان گیری رائس کا پریس بریفنگ کے دوران بتانا تھا کہ پاکستان سے قرضہ جاتی پروگرام پر بات چیت مکمل ہوگئی اور 6 ارب ڈالر کے پروگرام سے پاکستان کے لیے قرضوں کا دباؤ کم ہوگا اور اس سے پاکستان میں اقتصادی ترقی بڑھے گی۔آئی ایم ایف ترجمان نے کہا کہ آئی ایم ایف پروگرام سے پاکستان سماجی شعبوں کے لیے زیادہ رقوم استعمال کرسکے گا جس سے پاکستان میں انفراسٹرکچر کی بہتری ممکن ہوگی۔ترجمان نے کہا کہ آئی ایم ایف منیجنگ ڈائریکٹر کرسٹین لوگارڈ نے وزیراعظم پاکستان سے ملاقات کی جس کے بعد پاکستان اور آئی ایم ایف حکام کے درمیان 12 مئی کو 6 ارب ڈالر کے 3 سالہ پروگرام پر اسٹاف لیول مذاکرات ہوئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں