27

طالبہ نے 10 لاکھ ڈالر جیت کر انہیں کس کام پر خرچ کر دیا ؟ حیرت کے جھٹکے کے لیے تیار ہو کر یہ خبر پڑھیں

دبئی (ویب ڈیسک )انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر اردن کی طالبہ نے دس لاکھ امریکی ڈالر (13 کروڑ سے زائد پاکستانی روپے) لاٹری جیت کر رقم اردن کے پناہ گزینوں وقف کردی۔ تفصیلات کے مطابق سیاحت کی غرض سے متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی کا دورہ کرنے والی 20 سالہ اردنی طالبہ طلہٰ نے

دبئی انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے ڈیوٹی فری لکی ڈرا سے خریدی گئے لاٹری ٹکٹ سے 10 لاکھ امریکی ڈالر کی انعامی رقم گزشتہ روز جیتی تھی۔ اماراتی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ قسمت بدلنے کا لاٹری ٹکٹ 20 سالہ طلہٰ نامی اردنی شہری نے اردن جانے سے قبل خریدا تھا۔ اماراتی میڈیا کا کہنا ہے کہ اردنی طالبہ نے شامی پناہ گزینوں کو بہت جد و جہد کرتے دیکھا ہے اسی لیے طلہٰ نے فلاحی تنظیم کے ہمراہ رضاکارانہ طور پر اردن میں پناہ گزین شامیوں کیلئے تعلیم اور میڈیکل کی سہولیات فراہم کا ارادہ کیا۔ خلیج ٹائم سے گفتگو کرتے ہوئے کہ طلہٰ کا کہنا تھا کہ ’مجھے اس بات سے نفرت ہے کہ وہ مصیبت میں ہیں اور خوشی اس بات کی ہے کہ آخر کار میں شامیوں کےلیے کچھ کرسکتی ہوں‘۔ مجھے لوگوں کو تعلیم اور میڈیکل کی مد میں مدد کرنا بہت اچھا لگتا ہے، روزانہ ایک 10 سالہ بچے کو دیکھ کر میرا دل ٹوٹ جاتا ہے کہ جب وہ اسکول نہیں جاتا۔ اماراتی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ 20 سالہ اردنی کے طالبہ طلہٰ دسویں اردنی شہری ہے جس نے سنہ 1999 کے بعد اب تک دبئی ڈیوٹی فری لاٹری جیتی ہے۔اس سے قبل روزگار کے لیے متحدہ عرب امارات میں مقیم بھارتی شہری نے دبئی انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے ڈیوٹی فری لکی ڈرا سے پہلی مرتبہ خریدی گئی لاٹری سے ہی دس لاکھ امریکی ڈالر کی انعامی رقم جیت کر اپنے نام کی تھی ۔ اماراتی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ گذشتہ 6 برس سے اماراتی ریاست دبئی میں ملازمت کرنے والے ’45 سالہ سورو دے‘ نے کچھ عرصہ پہلے ملینیم ملینئر کمپنی کا جیکٹ پوٹ انعام جیتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں