ابھی نندن کی واہگہ بارڈر پر بھارت کے حوالے کئے جانے کامعاملہ بھارتی حکومت بوکھلا ہٹ کا شکار ،میڈیا کو کیا ہدایات جاری کر دیں

اسلام آباد (این این آئی)بھارتی پائلٹ ابھی نندن کی واہگہ اٹاری پر بھارت کے حوالے کئے جانے کے معاملہ پر بھارتی حکومت بوکھلا ہٹ کا شکار ہو گئی ، میڈیا کو کوریج سے روک دیا ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارت نے بھارتی میڈیا کو حوالگی کے مقام سے 2 کلومیٹر

دور دھکیل دیا۔ذرائع کے مطابق بھارت نے کوریج سے اس لئے روکا کیونکہ اسے ڈر ہے کہ پاکستان کو اسکا کریڈٹ ملے گا۔ دوسری جانب اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھارتی پائلٹ ابھی نندن کی رہائی کے خلاف خارج کر دی ہے ۔ جمعہ کو کیس کی سماعت چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے کی ۔ درخواست گزار بیرسٹر شعیب رزاق عدالت میں پیش ہوئے۔ وکیل درخواست گزار نے کہاکہ پاکستانی فوج نے دراندازی کرنے والے بھارتی پائلٹ کو پکڑا۔عدالت نے کہاکہ کس نے بھارتی پائلٹ کو واپس بھیجنے کا فیصلہ کیا؟ ۔عدالت نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان بھارتی پائلٹ کو واپس بھیجنے کا اعلان پارلیمنٹ میں کیا۔عدالت نے کہاکہ یہ پالیسی میٹر ہے۔عدالت نے کہاکہ بھارتی پائلٹ کی واپسی سے آپکے کونسے بنیادی حقوق متاثر ہوئے۔بیرسٹر شعیب رزاق نے کہاکہ ایل او سی پر جنگ جاری ہے۔بیرسٹر شعیب رزاق نے کہاکہ جنیوا کنونشن بھی ایسا ہی کہتاہے۔بیرسٹر شعیب رزاق نے کہاکہ بھارتی پائلٹ کی واپسی پر پارلیمنٹ کو اعتماد میں نہیں لیا گیا۔بیرسٹر شعیب رزاق نے کہا کہ آئین پاکستان بھی کی سالمیت کی ہدایت کرتاہے۔عدالت نے کہا کہ سپریم کورٹ کے 2014 کے فیصلے کے مطابق فارن پالیسی میں عدالت مداخلت نہیں کرسکتی۔عدالت نے کہاکہ پارلیمنٹ کے ممبران کو عوام نے منتخب کیا ۔ بعد ازاں عدالت نے درخواست مسترد کردی۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.