693

25 سالہ حاملہ لڑکی ماں بن گئی لیکن ایسے طریقے سے کہ دنیا ہکا بکا رہ گئی

مانچسٹر(نیوز ڈیسک)بچے کی پیدائش ایک پیچیدہ اور تکلیف دہ عمل ہے جس سے گزرنے والی بعض خواتین تو درد زہ کی تکلیف کو موت کی تکلیف سے تشبیہہ دیتی ہیں۔ یہ سب باتیں اپنی جگہ ضرور درست ہوں گی مگر برطانوی لڑکی نکول جیمیسن کے بچے کی پیدائش تو ایسے حیران کن انداز

میں ہوئی ہے کہ وہ خود بھی سمجھنے سے قاصر ہیں کہ آخر یہ ہوا کیا ہے۔مانچسٹر سے تعلق رکھنے والی 25 سالہ نکول کا کہنا ہے کہ انہیں یہ اندازہ ہی نہیںہوا کہ وہ دردِزہ محسوس کر رہی ہیں بلکہ وہ سمجھ رہی تھیں انہیں ٹوائلٹ جانے کی ضرورت ہے۔ ان کے حمل کی مدت مکمل ہونے میں ابھی تین ہفتے کا وقت باقی تھا۔ شام کے وقت وہ اپنے خاوند جیک فیلن کے ساتھ باہر کھانا کھانے گئی تھیں اور واپس آکر رات گئے تک فلمیں دیکھتی رہی تھیں۔نکول نے بتایا کہ رات 2 بجے کے قریب انہیں پیٹ میں ہلکا سا درد محسوس ہوا تو وہ ٹوائلٹ گئیں اور 9 منٹ بعد واپس آئیں تو ان کی بانہوں میں ان کا نومولود بیٹا تھا۔ واش روم سے انہوں نے جیک کو آواز دے کر بتایا کہ اُن کے ہاں بچے کی پیدائش ہو رہی تھی جس پر وہ ایمبولینس بلوانے کیلئے کال کرنے لگے لیکن جب تک اُن کی کال ختم ہوئی تب تک ان کے بیٹے کی پیدائش بھی ہو چکی تھی۔نکول کہتی ہیں کہ ”میرے ہاں یہ پہلے بچے کی پیدائش تھی۔ میں اس کی پیدائش کے لئے کافی تیاریاں کر رہی تھی اور باقاعدگی سے ہسپتال کے چکر بھی لگا رہی تھی لیکن اس نے وقت سے پہلے اور یوں اچانک آ کر ہم دونوں کو حیران کر دیا ہے۔ مجھے تو یقین ہی نہیں آ رہا کہ بس 9 منٹ میں یہ سب کچھ ہو گیا اور میں ماں بن گئی۔میرے بیٹے کی پیدائش نے میری زندگی بالکل بدل کر رکھ دی ہے۔ میں بہت زیادہ مسرور ہوں اور ہر وقت اپنے بیٹے کو مسکراتے ہوئے دیکھ کر مسکراتی رہتی ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں