17 ماہ میں 12 کروڑ ۔۔۔!!! عوام مرتی ہے تو مر جائے لیکن بُزدار حکومت نے پی آئی سی حملے کے بعد کیا منصوبہ بنا لیا تھا ؟ رؤف کلاسرا کا تہلکہ خیز انکشاف

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب کے اہم مقامات رینجرز کے حوالے، سیکورٹی خدشات کے پیش نظر گورنرہاؤس،وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ، سول سیکریٹریٹ ،پنجاب اسمبلی سمیت اہم مقامات پر رینجرز تعینات کر دی گئی ہے، رینجرز کی خدمات تین مہینوں کے لیے حاصل کی گئیں ہیں۔تفصیلات کے مطابق محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے کہا گیا ہے کہ ممکنہ

واقعہ کےخدشات کےپیش نظر اور آئندہ کسی بھی قسم کی صورتحال سے نمٹنے کے لیے رینجرزتعینات کی، رینجرزکی خدمات 3 ماہ کےلئےلی گئی ہیں، محکمہ داخلہ پنجاب کا کہنا ہے کہ پنجاب کے اہم مقامات پررینجرزتعینات کرنے کی منظوری دے دی گئی ہے، گورنرہاؤس،وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ پر رینجرزتعینات سول سیکریٹریٹ ،پنجاب اسمبلی اوراہم مقامات پررینجرزتعینات کی گئی ہے۔، محکمہ داخلہ پنجاب سے رینجر کی تعیناتی کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا گیا ہے ۔ اسی خبر پر رد عمل دیتے ہوئے سینئر صحافی رؤف کلاسرا کا کہنا ہے کہ ’’اپنی باری لگی تو رینجرز کو اپنی حفاظت پر تعنیات کر لیا کہیں وکیل کل ان پر اس طرح نہ چڑھ دوڑیں جیسے ہسپتال پر حملہ آور ہوئے۔عوام مرتی رہی،ہسپتال تباہ ہوتا رہا یہ سب تماشہ دیکھتے رہے۔اگر میڈیا شور نہ مچاتا تو بزدار حکومت نے اس خونخوار دنگل میں نیوٹرل رہنے کا منصوبہ بنایا ہوا تھا‘‘۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.