بڑوں فیصلوں کا وقت۔۔!! ڈی جی آئی ایس آئی فیض احمد اور وزیر اعظم عمران خان میں اہم ملاقات

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) وزیراعظم سے ڈی جی آئی ایس آئی کی اہم ملاقات، ملاقات کے دوران عمران خان اور لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کے درمیان قومی سلامتی سمیت مختلف اہم امور پر تفصیلی تبادلہ خیال ہوا۔ تفصیلات کے مطابق ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید نے بدھ کے

روز وزیراعظم عمران خان سے ان کے دفتر میں ملاقات کی۔ملاقات کے دوران دونوں شخصیات کے درمیان قومی سلامتی سمیت مختلف اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقات میں اہم قومی سلامتی کے امور پر زیادہ بات چیت کی گئی۔ خیال رہے کہ چند روز قبل وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے درمیان ملاقات ہوئی، جس میں کورونا سے متعلق اقدامات اور قومی سلامتی کی صورتحال پر بات چیت کی گئی، ملاقات میں ڈی جی آئی ایس آئی بھی موجود تھے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے درمیان ملاقات ہوئی ہے۔ملاقات میں ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید بھی موجود تھے۔بتایا گیا ہے کہ ملاقات میں کورونا وائرس کی صورتحال اور حکومتی اقدامات پربات چیت کی گئی۔ وزیراعظم کو بھارت کی طرف سے ایل اوسی پر جاری اشتعال انگیزی اور جارحیت اور پاک فوج کی جوابی کاروائی پر بھی بریفنگ دی گئی۔ وزیراعظم نے لاک ڈاؤن کے دوران ملک میں تعینات فوج اور سکیورٹی اداروں کی کارکردگی کو سراہا۔ ملاقات میں ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل سٹاف کی کارکردگی کی بھی تعریف کی گئی۔ کورونا سے نمٹنے کیلئے امداد اور ریلیف کی وفاقی سمیت چاروں صوبوں، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں تقسیم پر بھی بات چیت کی گئی۔دوسری جانب قومی رابطہ کمیٹی نے لاک ڈاؤن کو مزید توسیع دینے کا فیصلہ کرلیا، لاک ڈاؤن میں توسیع کا کل باقاعدہ اعلان کیا جائے گا، اجلاس میں تعمیراتی سیکٹر کا پہلا فیز کل سے

کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت قومی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں چاروں وزراء اعلیٰ نے شرکت کی۔اجلاس میں ملک بھر میں کورونا ٹیسٹنگ کی صلاحیت بڑھانے اور عوامی آگاہی مہم کو مزید مئوثر انداز میں جاری رکھا جائے گا۔ اجلاس میں تمام وزراء اعلیٰ نے لاک ڈاؤن اور کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق اپنی تجاویز پیش کیں۔ وزیراعلیٰ سندھ نے لاک ڈاؤن میں توسیع سے متعلق اپنی تجویز پیش کی ہے کہ وفاقی حکومتی تمام فیصلے سندھ کی تجاویزکو مدنظررکھ کر کرے۔جس پر قومی رابطہ کمیٹی نے لاک ڈاؤن سے متعلق صوبوں کے ساتھ مل کرمشترکہ فیصلے کرنے پر اتفاق کیا۔ اسی طرح اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ تعمیراتی سیکٹر کا پہلا فیز کل کھولا جائے گا۔ قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں ملک بھر میں لاک ڈاؤن میں مزید توسیع کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے، جس کا باقاعدہ اعلان آئندہ 24 گھنٹے میں کردیا جائے گا۔ وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے میڈیا بریفنگ میں بتایا کہ کل صبح قومی رابطہ کمیٹی کا کل پھر اجلاس ہوگا، جس میں15 مارچ کے بعد کیا کرنا ہے،اس حوالے سے حکمت عملی بنائی جائے گی۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.