چوری کی ایسی انوکھی واردات کہ جان کر ہی آپ کے بدن پر خوف سے کپکپی طاری ہو جائے گی

ایمسٹرڈیم (ویب ڈیسک) مغربی ممالک اور یورپ میں چوری کی انوکھی وارداتیں بڑھنے لگیں ،منظم گروہ نے ایسی ’’خطرناک چیز ‘‘ چرانا شروع کر دیں ہیں کہ جان کر ہی آپ کے بدن پر خوف سے کپکپی طار ی ہو جائے گی ،اسکاٹ لینڈ میں انوکھی چوری اس وقت دیکھنے میں آئی جب ایک چور ر تقریبا 60 ہزار شہد کی مکھیاں لے اڑا۔

ضرور پڑھیں: بنگال ٹائیگرز نے افغانیوں کے لیے بڑا ہدف سیٹ کردیا، افغان کھلاڑی ہدف کے تعاقب کے لیے تیار
امریکی ٹی وی کے مطابق آپ یہ جان کر حیران ہوں گے کہ امریکا، برطانیہ، نیوزی لینڈ اور دوسرے ممالک میں شہد کی مکھیاں چرانے کے واقعات تیزی سے رونما ہورہے ہیں،فارمز ہاؤسز میں مسلح محافظ رکھنے کے باوجود ’’ماہر چور‘‘ شہد کی ہزاروں مکھیاں ایسے چرا لیتے ہیں کہ کوئی تصور بھی نہیں کر سکتا ۔سکاٹ لینڈ میں انوکھی چوری کی واردات اس وقت دیکھنے میں آئی جب ایک چور ر تقریبا 60 ہزار شہد کی مکھیاں لے اڑا۔

شہد کی مکھیوں کی چوری پر فارم کے مالک کا کہنا تھا کہ وہ اپنی اس جمع پونجی سے ریٹائرمنٹ کے بعد شہد کا بزنس شروع کرنے والے تھے لیکن چور اس کی عمر بھر کی کمائی لے اڑے۔ بی کیپر ایسوسی ایشن کے چیئرمین نے بتایاکہ یہ کام کسی ایسے شخص کا ہے جو خود شہد کی مکھیوں کا ماہر ہے کیوں کہ یہ چوری بہت مہارت سے کی گئی ہے۔واضح رہے کہ چوری کی بڑھتی ہوئی ان وارداتوں کے بعد مسلح محافظ فارم ہاؤسز میں رکھنے کے باوجود چوری کییہ انوکھی وارداتیں تسلسل کے ساتھ جاری ہیں جبکہ گذشتہ سال اگست میں برطانیہ کی تاریخ میں شہد کی مکھیوں کی چوری کا سب سے بڑا واقعہ رونما ہوا تھا جس میں چالیس ہزار مکھیاں چھتے سمیت چرا لی گئیں تھی، یہ واقعہ ویلز کے شمال مغرب میں واقع جزیرہ انگلسی میں پیش آیاتھا۔

13

اپنا تبصرہ بھیجیں