20 روپے چوری کرنے پر امام مسجد کا اور ساتھی نے 10 سالہ بچے پر تشدد،چھڑیوں سے کھال ادھیڑ ڈالی

شیخوپورہ کے علاقہ جنڈیالہ شیرخان میں مسجد کے گلے (فنڈ بکس) سے 20 روپے چوری کرنے کے الزام پر امام مسجد اور ان کے ساتھی نے 10 سالہ بچے پر ظلم و تشدد کی انتہا کر دی. امام مسجد نے محنت کش کے کمسن بیٹے ذوہیب کو مسجد کے صحن میں ننگا لٹا کر چھڑیوں سے کھال ادھیڑ دی. چہارم کلاس کے ظالب علم ذوہیب آدھا گھنٹہ تشدد کے باعث چیختا رہا.مگر کسی نے ظالم مولوی سے جان نہ چھڑائی بچہ تشددکی تاب نہ لاتے ہوئے بے ہوش ہو گیا.تشدد کرنے کے بعد مولوی اور اس کا ساتھی کو پولیس نے مقدمہ درج کرکے حراست میں لے لیا بچے کے والد نے روتے ہوئے اعلی حکام سے اپیل کی ہے کہ میرے معصوم بچے کو انصاف دلوایا جائے

17

اپنا تبصرہ بھیجیں